ہیوسٹن میں نریندر مودی کے خلاف احتجاج، علی امین گنڈاپور کی شرکت

ہیوسٹن(سی این پی) امریکی ریاست ٹیکساس کے شہر ہیوسٹن میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف زبردست احتجاج کیا گیا جس میں وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین گنڈاپور نے بھی شرکت کی۔تفصیلات کے مطابق ہیوسٹن میں مودی کے خلاف زبردست مظاہرہ کیا گیا، مظاہرین کی جانب سے مودی ہٹلر اور فاسشٹ اور مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند کرو کے نعرے لگائے گئے۔وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین گنڈاپور نے بھی ہوسٹن میں ہونے والے احتجاج میں شرکت کی، انھوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل کرایا جائے، دنیا مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم بند کرانے میں کردار ادا کرے۔علی امین گنڈاپور کا کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر نیوکلیئر فلیش پوائنٹ ہے، پاک بھارت تصادم نہ صرف خطے بلکہ دنیا کی سلامتی کے لیے بھی خطرناک ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز اقوام متحدہ ہیڈ کوارٹرز کے سامنے عیسائی کمیونٹی نے بھی بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے خلاف مظاہرہ کیا، جس میں اقلیتوں کے نمایندوں نے مودی کی ہندو انتہا پسند پالیسیوں کے خلاف شدید احتجاج کیا۔مقبوضہ کشمیر میں نریندر مودی کی ظالمانہ پالیسیوں کے خلاف ہیوسٹن اور گلاسگو میں بھی سیکڑوں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ مسلمانوں، سکھوں، کرسچنز اور نچلی ذات والے ہندوں پر تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے، مودی ایک ہندو انتہا پسند ہے اور گجرات میں مسلمانوں کا قاتل ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں