پنجاب حکومت کا پنشنرکے لیے بڑا قدم

لاہور(سی این پی) پنجاب حکومت نے پنشنرز کو سہولیات فراہم کرنے کے لیے بڑا قدم اٹھالیا، تعطل کا شکار تمام پنشن کیسز نپٹانیکی ہدایات جاری کردی گئیں۔تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت نے تمام محکموں کو پینڈنگ پنشن کیسز کی تفصیلات 30 ستمبر 2019 تک وزیر اعلی آفس میں بھجوانے کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعلی آفس کی جانب سے ریٹائرڈ سرکاری ملازمین کے پنشن کیسز کے حل کے لئے خصوصی احکامات دیے گئے ہیں ، احکامات کے تحت پنشن کیسز کی منظوری دینے والی تمام اٹھارٹیز کو 31 دسمبر 2019 تک تعطل کے شکار تمام کیسز نمٹانے کی ہدایات جاری کی گئی ہے۔وزیراعلی عثمان بزدارکی جانب سے خصوصی ہدایت جاری کی گئی ہیں کہ اس تعطل سے بچنے کے لئے پنشن رولز کے مطابق آئندہ ریٹائرمنٹ سے 1 سال قبل سرکاری ملازمین کے پینشن دستاویزات تیار کئے جائیں اور 6 ماہ قبل مکمل دستاویزات آڈٹ افسر کو بھجوائے جائیں۔ساتھ ہی ساتھ احکامات میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ تمام اتھارٹیز پینڈنگ پینشن کیسز کے ڈسپوزل کی ماہانہ رپورٹ ہر ماہ کی 10 تاریخ تک وزیر اعلی آفس بھجوانے کی پابند ہوں گی۔یاد رہے کہ پنجاب میں پنشنر گزشتہ کچھ عرصے سے مسائل کا شکار تھے اور حکومت سے مطالبہ کررہے تھے کہ ان کی شکایات کا جلد ازالہ کیا جائے، پنشنر کی درخواست پر وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار نے اس معاملے پر خصوصی توجہ دی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں