امریکہ میں انٹرنیٹ کا بڑھتا استعمال، ملکی معیشت میں 2018 کے دوران اس شعبے کا حصہ 2.1 ٹریلین ڈالر رہا، انٹرنیٹ ایسوسی ایشن

بیجنگ(سی این پی)ماہرین نے کہا ہے کہ امریکہ میں انٹرنیٹ کے استعمال میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور ملکی معیشت میں 2018 کے دوران اس شعبے کا حصہ 2.1 ٹریلین ڈالر رہا جو مجموعی قومی پیداوار کے 10 فیصد کے قریب ہے۔اس بات کا انکشاف امریکی تجارتی گروپ انٹرنیٹ ایسوسی ایشن نے اپنی حالیہ رپورٹ میں کیا۔یہ گروپ ایمزون ڈاٹ کام ، فیس بک، ایلفابیٹ کمپنی،ٹوئٹر، اوبر ٹیکنالوجی اور دیگر کئی کمپنیوں کی نمائندگی کرتا ہے۔گروپ کا کہنا ہے کہ جائیدادوں کی خریدوفروخت، حکومت اور پیداواری شعبے کے بعد انٹرنیٹ سیکٹر امریکی معیشت کا چوتھا بڑا اور اہم ترین جزو ہے ،2018 کے دوران ملکی معیشت میں پیداواری شعبے کا حصہ 2.3 ٹریلین ڈالر کے قریب رہا۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ انٹرنیٹ سیکٹر کے امریکہ میں 60 لاکھ ملازمین ہیں جو کل ملکی ملازمین کا 4 فیصد ہیں، اس کے علاوہ 1 کروڑ 30 لاکھ افراد ایسے ہیں جن کا روزگار بالواسطہ طور پر اس شعبے سے وابستہ ہے، اس شعبے کے 2018 کے دوران کیپیٹل اخراجات کا حجم 64 ارب ڈالر رہا ۔یاد رہے کہ 2014 کے دوران انٹرنیٹ سیکٹر کا امریکی معیشت میں حصہ 966.2 ارب ڈالر رہا جو مجموعی قومی پیداوار کا 6 فیصد تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں