انڈونیشیا میں زلزلے سے ہلاکتوں کی تعداد 30 ہوگئی، لاکھوں افراد بے گھر

جکارتہ(سی این پی) انڈونیشیا کے مشرقی صوبے ملوکو میں آنے والے زلزلے میں ہلاکتوں کی تعداد 30 سے تجاوز کرگئی ، لاکھوں افراد تاحال بے گھر ہیں۔تفصیلات کے مطابق نیشنل ڈیزاسٹر ایجنسی (بی این بی پی)کے ترجمان آگس ویبوو نے بتایا کہ ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہوگیا ہے اور 150 افراد زخمی ہوگئے ہیں۔میڈیا رپورٹس کے مطابق دو لاکھ سے زائد افراد خیموں میں موجود ہیں، جن شہریوں کے گھر تباہ ہوئے تھے ان کے لیے اسپتالوں کے قریب یا اسکول کے برآمدوں میں خیمے لگائے گئے ہیں۔انڈونیشیا کے حکام نے زلزلے کے بعد سمندر کے قریب رہائش پذیر شہریوں کو سونامی کے خدشے پر وسیع میدان میں منتقل کردیا حالانکہ حکام نے کسی قسم کے خطرے کے امکان کو مکمل طور پر مسترد کردیا تھا۔آگس ویبوو کے مطابق زلزلے کے باعث کم از کم 100 افراد زخمی ہوئے اور 2 ہزار سے زائد مقامی افراد نے محفوظ مقام پر نقل مکانی کی۔ڈیزاسٹرمینجمنٹ کے مطابق ریکٹر اسکیل پر زلزلے کی شدت 6.5 ریکارڈ کی گئی۔ امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق زلزلے کا مرکز شمالی شہر امبو سے 37 کلومیٹر دور اور 29 کلومٹیر زیر زمین تھا۔ڈیزاسٹر ایجنسی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ لوگ آفٹر شاکس سے خوف زدہ ہیں اور عارضی خیموں میں خود کو زیادہ محفوظ تصور کررہے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں