مہوش حیات بتائیں انہیں کشمیری بچوں کیلئے نہ بولنے سے کس نے منع کیا،سوشل میڈیا صارفین

اسلام آباد(سی این پی )مہوش حیات سوشل میڈیا پر شدید تنقید کی زد میں جسکی اہم وجہ کشمیری بچوں کےلئے بات نہ کرنا ہے،خدمات کے اعتراف میں تمغہ امتیازحاصل کرنے والی مہوش حیات کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوچکی ہے جس کے بعد اداکارہ نے اس حوالے سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی وضاحت جاری کی ہے۔ویڈیو میں یتیم بچوں کے حوالے سے منعقدہ ایک تقریب میں شریک مہوش حیات سے کشمیری بچوں سے متعلق سوال کیا گیا جس پرانہوں نے واضح انکار کرتے ہوئے کہا کہ مجھے اس پر بات نہیں کرنی مجھے منع کیا گیا ہے۔یہ ویڈیو کلپ سوشل میڈیو پر وائرل ہوتے ہی اداکارہ کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔صارفین نے یہ سوال بھی اٹھایا کہ مہوش بتائیں انہیں کس نے ایسا کرنے سے منع کیا۔
مہوش حیات نے ٹوئٹرپرجواب دیا کہ سوشل میڈیا پر جاری ویڈیو میں میری بات کو سیاق وسباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا ۔ میں کشمیرکا معاملہ عالمی طور پراجاگر کرنے کیلئے آواز اٹھانے والوں میں سب سے آگے ہوں۔اداکارہ نے واضح کیا کہ یہ ویڈیو کلپ یتیم بچوں کیلئے ایک ایونٹ کی تھی جس کی انتظامیہ نے سیاسی گفتگو سے پرہیز اور یتیم بچوں کے معاملے سے توجہ نہ ہٹانے کی درخواست کی تھی۔اس وضاحت کے باوجود ٹویٹ کے جواب میں سوشل میڈیا صارفین نے تنقید کا سلسلہ جاری رکھا اور اداکارہ سے کہا کہ اگرایسا ہے تو وہ فوری طور پر کشمیریوں کیلئے ایک ویڈیو پیغام جاری کریں۔پریانکا کے شوہر کے ساتھ تصویر شیئر کرنےکو اس واقعے کے ساتھ بخوبی جوڑا گیا۔واضح رہے کہ رواں سال مارچ میں یوم پاکستان کے موقع پر مختلف شعبوں میں نمایاں خدمات سرانجام دینے والی127 شخصیات کو سول ایوارڈ دینے کا اعلان کیا گیا، جس میں مہوش حیات بھی شامل تھیں۔ حکومت کی جانب سے انہیں تمغہ امتیاز دیا گیا۔ مہوش کو ایوارڈ ملنے پرجہاں شوبز کی کچھ شخصیات نے ان کے نام نیک تمناؤں اور مبارک باد کے پیغامات دیے، وہیں عوام سمیت دیگر مشہور شخصیات نے ایوارڈ ملنے پرانہیں شدید تنقید کا نشانہ بھی بنایا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں