جج ویڈیو کیس، گرفتار ملزمان کو بری کرانے کیلئے جج کو سفارش کا انکشاف

اسلام آباد(سی این پی)ارشد ملک ویڈیو سکینڈل میں اہم انکشاف، ملزمان نے بریت کے لیے خاتون جج سے رابطہ کیا جس پر جج کے مبینہ ڈیل سے انکار اور کیس سننے سے معذرت پر معاملہ دوسری عدالت میں منتقل ہونے کے بعد ملزمان کو کیس سے رہائی مل گئی۔جج ویڈیو سکینڈل میں 3 گرفتار ملزمان نے بریت کے لیے سول جج شائستہ کنڈی سے رابطہ کیا، خاتون جج نے چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ کو صورتحال سے آگاہ کرتے ہوئے کیس سے علیحدگی اختیار کرلی۔چیف جسٹس اطہر من اللہ نے جج کے کنڈیکٹ کو سراہا اور تعریفی سند بھی جاری کی تاہم معاملہ دوسری عدالت میں جانے کے بعد تینوں ملزمان پولیس رپورٹ پر اسی روز بری ہو گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں