آزاد کشمیر، ہڑتال جاری، کھانے پینے کی اشیاء کی قلت

مظفر آباد(سی این پی)آزاد کشمیر میں مطالبات کی منظوری کیلئے عوامی ایکشن کمیٹی کی اپیل پر جاری ہڑتال کے باعث کھانے پینے کے اشیاءکی قلت ہوگئی۔عوامی ایکشن کمیٹی کی اپیل پر جاری ہڑتال کے باعث سبزی، فروٹ اور دیگر غذائی اجناس لانے والی گاڑیاں مارکیٹوں تک نہ پہنچ سکیں جس کے باعث کھانے پینے کے اشیاء کی قلت ہوگئی جب کہ میڈیکل اسٹورز بھی بند ہیں جس کےباعث شہری ادویات اور بچوں کے دودھ کے لیے پریشان ہیں۔

آزاد کشمیر میں موبائل فون سروس اور انٹرنیٹ سروس تاحال بند ہے، موبائل فون اور انٹرنیٹ مزید 2 روز بندکرنےکا فیصلہ کیا گیا ہے، آزاد کشمیر حکومت نے آج بھی تمام تعلیمی ادارے بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے جب کہ ضلعی دفاتر بھی بند رکھے جائیں گے۔دوسری جانب آزادکشمیر میں 11 مئی کو مظاہرین اور پولیس کی جھڑپوں میں گولی لگنے سے شہید ہونے والے سب انسپکٹر کی تدفین کردی گئی ہے جب کہ پرتشدد مظاہروں میں پولیس اہل کاروں سمیت اب تک 70 سے زائد افراد زخمی ہوئے، عوامی ایکشن کمیٹی نے پُرتشدد واقعات سے اظہارِ لاتعلقی کیا ہے۔

علاوہ ازیں وزیراعظم پاکستان شہباز شریف نے آزادکشمیر کی صورتحال پر ہنگامی اجلاس آج طلب کرلیا جو وزیراعظم ہاؤس میں ہوگا، اجلاس میں آزاد کشمیر حکومت، وزارت داخلہ کے نما ئندے اور دیگر اہم حکام شریک ہوں گے جب کہ اجلاس میں آزاد کشمیر کی موجودہ صورتحال پر وزیراعظم شہباز شریف کو بریفنگ دی جائے گی۔ خیال رہے کہ بجلی کے بلوں اور مہنگائی کے خلاف عوامی ایکشن کمیٹی کی اپیل پر آزاد کشمیر میں احتجاج جاری ہے، مختلف شہروں سے نکلنے والے لانگ مارچ کے قافلوں کا آج مظفرآباد پہنچنے کا امکان ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں