پاکستان اور ازبکستان کا باہمی فائدہ مند تعاون کو مزید وسعت دینے کا اعادہ

آستانہ (سی این پی )پاکستان اور ازبکستان نے کثیر جہتی تعلقات اور تجارت، روابط، دفاع، سلامتی، ثقافت اور عوام سے عوام کے رابطوں میں باہمی فائدہ مند تعاون کو وسعت دینے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔اس حوالے سے مفاہمت قازقستان کے شہر آستانہ میں منعقد ہونے والے شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہی اجلاس کے موقع پر وزیر اعظم محمد شہباز شریف اور جمہوریہ ازبکستان کے صدر شوکت مرزیوئیف کے درمیان ہونے والی ملاقات میں ہوئی۔

دوسرے ممالک کے لیے تجارت کی توسیع کے لیے ایک ٹرانزٹ پوائنٹ کے طور پر ازبکستان کی اہمیت کو تسلیم کرتے ہوئے، دونوں رہنماؤں نے اس مخصوص علاقے پر توجہ مرکوز کرنے اور اس مقصد کے لیے دستیاب مختلف آپشنز کا جائزہ لینے پر اتفاق کیا۔دونوں ممالک کے درمیان تجارت کو بڑھانے کے لیے ترمز سے کراچی پورٹ کنیکٹیویٹی پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے ایک خوشحال وسطی ایشیا اور بڑھے ہوئے علاقائی روابط کے لیے پاکستان کی خواہش کا اظہار کیا۔دونوں رہنماؤں نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ ترجیحی تجارتی معاہدے اور پاکستان ازبکستان ٹرانزٹ ٹریڈ ایگریمنٹ کو عملی جامہ پہنانے سے دوطرفہ تجارتی اور اقتصادی تعلقات کو مزید فروغ ملے گا۔

دونوں رہنماؤں نے افغانستان کی صورتحال اور پرامن اور مستحکم افغانستان کے لیے پاکستان اور ازبکستان دونوں کے مشترکہ مفاد پر بھی تبادلہ خیال کیا جو خطے کی ترقی اور خوشحالی میں شراکت دار ہو سکتا ہے۔ملاقات میں ازبکستان، افغانستان، پاکستان ریلوے پراجیکٹ کی جلد تکمیل پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں