پی ٹی آئی نے آج اسلام آباد میں ہونے والا جلسہ منسوخ کرنے کا اعلان کردیا

اسلام آباد (سی این پی )پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے آج اسلام آباد میں ہونے والا جلسہ منسوخ کرنے کا اعلان کردیا۔پی ٹی آئی کے چیئرمین بیرسٹر گوہر نے اسلام آباد میں پارٹی کے سینئر رہنماوں عمر ایوب، علی محمد خان، اسد قیصر، رؤف حسن اور دیگر کےہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے اس پیش رفت کا اعلان کیا۔

بیرسٹر گوہر نے کہا کہ ہم نے آج اپنی سیاسی کمیٹی کا اجلاس بلایا، آج ہمارا ون پوائنٹ ایجنڈہ تھا کہ جلسہ اسلام آباد میں منعقد ہونے جارہا تھا، یہ جلسہ آئین کے تحفظ کے لیے تھا ، ہم نے آج فیصلہ کیا ہے جلسہ منسوخ کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 4 مہینے بعد ایک این او سی جاری ہوا تھا، ڈپٹی کمشنر ہو یا چیف کمشنر کے کہنے سے این او سی معطل نہیں ہو سکتا ، ہم نے پھر بھی قانون کا سہارا لیتے ہوئے درخواست دائر کردی ہے، اسلام آباد ہائی کورٹ میں ہفتے کی وجہ سے جج موجود نہیں تھے، ہم نے یہی سوچا تھا کہ اجازت لیکر جلسے کریں گے۔

بیرسٹر گوہر نے کہا کہ حکومت چند دنوں کی مہمان ہے جس کے خلاف جدوجہد جاری رہے گی، تحریک انصاف کا جلسہ عاشورہ کے بعد ہوگا۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ حکومت کونہیں مانتے تاہم بانی پی ٹی آئی کی ہدایت کے مطابق حکومت کی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) میں شرکت کریں گے۔قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور پی ٹی آئی کے سیکریٹری جنرل عمر ایوب نے کہا کہ ملک میں گورننس نام کی کوئی چیز نہیں۔اس موقع پر سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ آئین سے ماورا آرڈر کس قانون کے تحت دیا جارہا ہے؟ ہمیں کہا گیا آپ نے این او سی کے بغیر جلسہ نہیں کرنا، ہم یقین رکھتےہیں کہ ملک کو آئین اورقانون کےتحت چلائیں، بندوق کے زور پر ملک نہیں چلایا جاسکتا۔

انہوں نے کہا کہ ہم ملک کو قائداعظم کا پاکستان بنانا چاہتے ہیں، ٹیکس کے بجٹ کو کسی صورت نہیں مانتے، ہم ڈٹے ہوئے ہیں، نہ ڈریں گے نہ پیچھے ہٹیں گے، ہمارے اپوزیشن لیڈر پارلیمنٹ کی نمائندگی کرتےہیں۔ان کا کہنا تھا کہ عمرایوب کو بانی پی ٹی آئی سےملاقات کی اجازت نہیں دی گئی، ہم کسی طور پرڈرے نہیں ہے، آئینی اورقانونی جنگ جاری رکھیں گے، پیپلزپارٹی اپنا ڈبل اسٹینڈرڈ ختم کرے۔اسد قیصر نے کہا کہ پیپلزپارٹی پی ٹی آئی کےساتھ ہونےوالی زیادتیوں پرکیوں بات نہیں کرتی؟

اپنا تبصرہ بھیجیں